• صارفین کی تعداد :
  • 4296
  • 4/8/2009
  • تاريخ :

 نظر کی عینک اور علم

عینک

 نظر کی عینک اور علم

مریض: کیا عینک لگوانے کے بعد میں پڑھ سکوں گا۔

ڈاکٹر: بالکل۔

مریض: اس سے زیادہ خوشی کی بات کیا ہوسکتی ہے۔ میرے والد بھی میری طرح ان پڑھ ہیں، ایک عینک ان کے لیے بھی بنوا دیں۔


دیہاتی شہر میں

دو دیہاتی پہلی مرتبہ شہر گئے۔ ایک بڑی سی بس پر نظر پڑی تو ایک نے کہا: ”دیکھو کتنا بڑا جانور بھاگا جا رہا ہے۔“

دوسرے کی نظر ایک کار پر پڑی تو وہ بولا:

”اور اس کے پیچھے اس کا بچہ بھی بھاگا جا رہا ہے۔“


پہچان

دو لڑکے آپس میں لڑ رہے تھے۔

ایک نے کہا: ”تم مجھے نہیں جانتے؟“

دوسرے نے کہا: ”جانتا ہوں، تم وہی ہو جو مار کھا کر بھاگ جاتے ہو۔“

شعبۂ تحریر و پیشکش تبیان